You are here
Home > منتخب کالم نگار > رؤف کلاسرا

سارے فساد کی جڑ نواز شریف : سعد رفیق اور آصف کرمانی کو آپس میں لڑوا کر بڑے میاں صاحب کیا گھناؤنا مقصد حاصل کرنا چاہتے تھے ؟ دھماکہ خیز انکشاف ہو گیا

لاہور (ویب ڈیسک) یہی خیال اب نواز شریف کا ہے۔ وہ اس حقیقت کو ماننے سے انکاری ہیں کہ ان کا دشمن آسمان ہوچکا، لہٰذا وہ ایک کے بعد دوسری غلطی کرتے جارہے ہیں۔ وقت ان کے ہاتھ سے نکل چکا ہے۔ وہ ایک ٹوٹی ہوئی پتنگ کے دھاگے کے

تیس سال بعد ”نیک پروین‘‘ اور ”نظریاتی‘‘مریم نواز اور اسکے بھولے بھالے پاپا جی نے کالی کمائی کا ایک اور استعمال ڈھونڈ نکالا ۔۔۔ یہ خبر پڑھیے اور اسے شیئر ضرور کیجیے

لاہور (ویب ڈیسک) پہلے ایک ٹرینڈ تھا، سیاست میں تو پھانسی بھی چڑھنا پڑتا ہے۔ سیاست کا وہ امیج بدلنا شروع ہوا۔ پہلے یہ ٹرینڈ تھا کہ گھر کا کوئی بندہ سی ایس ایس افسر یا فوج میں کیپٹن ہونا چاہیے‘ پھر نیا ٹرینڈ ابھرنے لگا کہ نہیں ایک بچہ

بینظیر بھٹو کے قتل کا بدلہ آصف زرداری نے اقتدار میں آتے ہی کس سے اور کس طرح لیا ؟ رؤف کلاسرا کا تہلکہ خیز انکشاف

لاہور (ویب ڈیسک) مسلم لیگ نواز کی حکومت کے پانچ برس گزر گئے اور پتہ ہی نہیں چلا۔ مجھے یاد ہے 2002کے بعد سیاست سے ایک رومانس شروع ہوا تھا۔ کئی سیاستدان جن کے صرف نام سنے تھے‘ ان کی تقریریں براہ راست سننے کا موقع ملا۔ ان دنوں ابھی

اور پھر یوں ہوا کہ۔۔۔ شریفوں زر والوں اور بڑے بڑے پھنے خانوں کو ناکوں چنے چبوا دینے والے شخص نے بھی باعزت اور باوقار طریقے سے تحریک انصاف اور عمران خان کو خیر باد کہہ دیا

لاہور (انتخاب : شیر سلطان ملک ) سابق پولیس افسر اور ایف آئی اے کے اعلیٰ پائے کے تفتیش کار ظفر قریشی کی آواز میں گہری مایوسی تھی ۔ میری ان سے بڑے عرصے بعد فون پر بات ہورہی تھی۔ کچھ برس پہلے ریٹائرمنٹ کے بعد وہ اپنے آبائی گھر

کچھ لوگوں کو چیف جسٹس ثاقب نثار کیوں اچھے نہیں لگتے۔۔۔۔۔۔۔۔؟ ملاحظہ کیجیے رؤف کلاسرا کی انکشافات سے بھر پور تحریر

لاہور (ویب ڈیسک) کرپشن کی فلاسفی ہے کہ یہ چھپ کر نہیں رہ سکتی۔ جب اچانک پتا چلتا ہے کہ اس پورے نظام کو ایک بندے نے ہائی جیک کر کے مال بنا لیا ہے تو پھر سارے سمجھدار دوبارہ سر جوڑ کر بیٹھتے ہیں اور سسٹم میں موجود ان

ہم تو وہ لوگ ہیں جو ۔۔۔۔۔۔۔۔ منو بھائی مرحوم کا یہ ایک فقرہ پڑھ کر آپ کو نواز شریف المعروف مجھے کیوں نکالا کی اصل وجہ مقبولیت معلوم ہو جائے گی

لاہور (ویب ڈیسک) کبھی کبھی خود پر حیرانی ہوتی ہے کہ کس مٹی کا بنا ہوا ہوں۔ منو بھائی کا فقرہ یاد آ جاتا ہے: ہم وہ لوگ ہیں جو مقتول کی ماں کے ساتھ بھی روتے ہیں تو قاتل کی ماں بھی ہمیں اتنی ہی مظلوم لگتی ہے۔کچھ دن

اک نظر کرم کی دیر تھی 70 ہزار ماہانہ لینے والے کی تنخواہ اچانک 15 لاکھ روپے ہو گئی ۔۔۔۔۔۔ پاکستان بھی کیسے کیسے لطیفوں سے بھرا پڑا ہے ۔۔۔ملاحظہ کیجیے ایک شاندار تحریر

لاہور (ویب ڈیسک) پچھلے دنوں امریکی چینل فاکس نیوز کی دس سال پرانی ویڈیو دیکھنے کا اتفاق ہوا۔ یہ ایک امریکی دفاعی مبصر کی چند منٹ کی گفتگو پر مشتمل تھی۔ بینظیر بھٹو کو پاکستان میں قتل ہوئے دوسرا دن تھا۔ پوری دنیا سوگوار تھی۔ توقع کی جارہی تھی یہ

ان دنوں کا تذکرہ جب آج شریفوں کا دست و بازو سمجھے جانیوالے مشاہد حسین جنرل مشرف کی شان میں قصیدے پڑھتے تھے اور شریف خاندان کی دھوکا دہی کی کہانیاں سناتے تھے

لاہور (ویب ڈیسک) پاکستان میں ایک مِتھ بنی ہوئی ہے کہ یہاں سیاست کرنا بہت مشکل کام ہے۔ یہاں جیلیں، تھانے، پھانسی گھاٹ… سب سیاستدانوں کے لیے ہی ہیں۔ اپنی اس بات میں وزن پیدا کرنے کے لیے کئی مثالیں بھی دی جاتی ہیں‘خصوصاً بھٹو صاحب کی پھانسی سے لے

شریفوں اور زر والوں کی گڈگورننس : کچھ عرصہ قبل نامور پاکستانی بزنس مین کو سرکاری اعزاز(میڈل) حاصل کرنے کا شوق چرایا تو اس نے 50 لاکھ روپے میں کس سے سودا طے کیا ؟ پاکستانی حکمرانوں کی اصل اوقات بتا دینے والی خبر

لاہور (ویب ڈیسک) اقتدار سے باہر ان لوگوں کی گفتگو سننے کا اپنا مزہ ہے۔ بعض اوقات تو دل چاہتا تھا کہ مارشل لاء اس ملک پر قائم رہے تاکہ ہمارا ان سیاستدانوں سے جڑا رومانس بھی قائم رہے۔ ان کے قد کاٹھ ایسے رہیں۔ ہم جیسے اب ان سے

اب یا تو اس ملک میں ارب پتی لوگ رہیں گے یا جمہوریت ، دونوں کا ایک ساتھ چلنا ناممکن ہے ۔۔۔۔۔۔۔رؤف کلاسرا کا موجودہ ملکی حالات پر شاندار تبصرہ ملاحظہ کیجیے

لاہور (انتخاب : شیر سلطان ملک) دو ماہ قبل لاہور گیا تھا تو وہاں لبرٹی مارکیٹ کی بڑی دکان میں اس عظیم کتاب کا دوسرا اور تیسرا حصہ تو موجود تھا لیکن پہلا فروخت ہو چکا تھا۔ شاید کوئی نیا شوقین صرف پہلا حصہ لے گیا تھا‘ اور یوں پورا

Top