You are here
Home > اسپیشل اسٹوریز > میں اور میرا بکرا

میں اور میرا بکرا

بڑی حسرت سے جو ہم چلے بکرا لینے، بکرا منڈی دیکھ کے قیمتیں ہو گئی ہماری حالت ٹھنڈی لے کر گئے ہم چار ماہ تنخواہ برابر پیسے کہ جہاں بکرا دیکھوں پکڑ لوں دیکھ کر ااتنے پیسیبکرے والے نے کہا ٹھہرئیے جناب میں زرا ہنس لوں غصے سے ہم یوں گویا ہوئے کیا

تمہیں شرم بھی آتی ہے کہنے لگا صاحب اس رقم میں تو صرف بکرے کی دم آتی ہے جو دیکھا ایک نا تواں بکرے کو تو پتہ چلا کہ وہ عشق کا مارا ہے چوم کے بکرے والے کا ماتھا کہا ہم نے آج سے یہ دلدارا ہمارا ہے سوچا تھا کہ میں نے میرا سویا ہوا نصیب جاگ گیا ہے لیکن ہائے ہائے کہ اب میرا بکرا پڑوسی کی بکری کے ساتھ بھاگ گیا ہے

Leave a Reply

Top