You are here
Home > اسپیشل اسٹوریز > کسی اور کا پتہ

کسی اور کا پتہ

ایک شخص بہت ہی نیک اور مالدارتھااس کا کہنا ہے کہ ایک دن میرا دل بہت بے چین ہوا‘ہر چند کوشش کی کہ دل بہل جائے، پریشانی کا بوجھ ا ±ترے اور بے چینی کم ہوجائے مگر بے چینی تھی کہ بڑھتی ہی جا رہی تھی‘ جب کچھ سکون نے آیا تو میں بے چینی کم کرنے کےلئے

باہر نکل گیا اورادھر ادھر گھومنے لگا،گھومتے گھومتے میں ایک مسجد کے قریب پہنچا جس کا دروازہ کھلا تھا‘کسی فرض نمازوں کا وقت بھی نہیں تھا، میں بے ساختہ مسجد میں داخل ہوا کہ وضو کر کے دو چار رکعت نمازادا کرتاہوںتاکہ دل کو سکون آ جائے‘ وضو کے بعد مسجد میں داخل ہوا تو ایک صاحب کو دیکھا‘خوب رو رو کر گڑ گڑا کر دعاءمانگ رہے ہیںاور کافی بے قرار ہیں‘ غور سے ان کی دعاءسنی تواللہ سے قرضہ اتارنے کی فریاد کر رہے تھے‘ان کو سلام کیا، مصافحہ ہوا، قرضہ کا پوچھا‘ بتایا آج ادا کرنے کی آخری تاریخ ہے اپنے مالک سے مانگ رہا ہوں‘ان کاقرضہ چند ہزار روپے کا تھا وہ میں نے جیب سے نکال کر دے دیئے‘ ان کی آنکھوں سے آنسوچھلک پڑے اور میرے دل کی بے چینی سکون میں تبدیل ہو گئی‘ میں نے اپنا وزیٹنگ کارڈ نکال کر پیش کیا کہ آئندہ جب ضرورت ہو مجھے فون کر لیں‘ یہ میرا پتا ہے اور یہ میرا فون نمبر‘ انہوں نے بغیر دیکھے کارڈ واپس کر دیا اور فرمایا‘ ناں جناب! میرے پاس اس کا پتا موجود ہے جس نے آج آپ کو بھیجا ہے‘ میں کسی اور کا پتا جیب میں رکھ کراس کو ناراض نہیں کر سکتا۔

Leave a Reply

Top
Игровые автоматы