You are here
Home > خبریں > پاکستان > اچھا تو اصل کہانی یہ تھی۔۔۔۔تین روز قبل نیب کے ماڈل ٹاؤن میں حمزہ شہباز کی گرفتاری کے لیے چھاپے کے دوران69ایچ میں کیا واقعات پیش آئے؟

اچھا تو اصل کہانی یہ تھی۔۔۔۔تین روز قبل نیب کے ماڈل ٹاؤن میں حمزہ شہباز کی گرفتاری کے لیے چھاپے کے دوران69ایچ میں کیا واقعات پیش آئے؟

لاہور(ویب ڈیسک ) ن لیگ کے رہنما ملک احمد خان نے کہاہے کہ نیب کی ٹیم نے حمزہ شہباز کے گھر گھسنے کی کوشش کی ۔ایک چھوٹے کیمرے کی سی سی ٹی وی فوٹیچ میڈیا کودیں گے۔ نجی ٹی وی کے نیوز پروگرام میں بات چیت کرتے ہوئے ملک احمد خان نے کہا کہ

نیب کی ٹیم نے حمزہ شہباز کے گھر گھسنے کی کوشش کی۔ایک چھوٹے کیمرے کی سی سی ٹی وی فوٹیچ میڈیا کودیں گے۔نیب ٹیم نے کہا کہ ہمارے پاس سرچ وارنٹ نہیں بلکہ ریسٹ وارنٹ ہے۔انہوں نے کہا کہ بعد میں نیب کی جانب سے من گھڑت پریس ریلیزجاری کی گئی ۔حمزہ شہباز نے بعد میں کارکنان کو منتشر کرنے کیلئے چھت پر جاکر تقریر کی جس پر کارکن پرامن پر منتشر ہوگئے۔ان کا کہنا تھا کہ لاہور ہائیکورٹ کا فیصلہ تھا کہ نیب کی جانب سے حمزہ شہباز شریف کو اطلاع دیئے بغیر گرفتار نہیں کیا جائیگا۔ نیب نے لاہورہائیکورٹ کا فیصلہ نظر انداز کیا۔انہوں نے کہا کہ نیب ٹیم کے ڈرائیور کی شرٹ پھاڑی نہیں گئی بلکہ گزرنے سے خود پھٹی۔دوسری جانب احتساب عدالت نے رمضان شوگر ملز کیس میں نامزد سابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف اور ان کے صاحبزادے حمزہ شہباز پر فرد جرم عائد کردی۔تفصیلات کے مطابق کی احتساب عدالت میں رمضان شوگر ملز کیس سماعت ہوئی، سماعت میں شہباز شریف اور حمزہ شہباز عدالت میں پیش ہوئے۔ قومی ادارہ احتساب بیورو (نیب)کے وکیل نے کہا کہ رمضان شوگر ملز کیس میں سرکاری خزانے سے نالہ بنایا گیا،یہ اختیارات سے تجاوز کا کیس ہے۔شہباز شریف نے کچھ کہنے کی کوشش کی تو عدالت نے انہیں روک دیا اور کہا کہ آپ کو سب کچھ کہنے اور سنانے کا موقع دیا جائے گا۔قانونی اور طریقہ کار کی چیزیں ہیں جو قانون کے مطابق ہونی ہیں۔شہباز شریف کا کہنا تھا کہ میں نے10سال میں حکومت کے کئی سو ارب روپے بچائے۔

Leave a Reply

Top