You are here
Home > اسپیشل اسٹوریز > صرف بیویاں ہی نہیں مرد بھی اپنی بیویوں کی بیماری کا باعث بنتے ہیں

صرف بیویاں ہی نہیں مرد بھی اپنی بیویوں کی بیماری کا باعث بنتے ہیں

نیویارک عام طور پر کہا جاتا ہے کہ بیویاں اپنے شوہروں کے لئے مختلف مسائل کا باعث بنتی ہیں لیکن اب ماہرین نے انکشاف کیا ہے کہ شوہر بھی اپنی بیویوں کے لئے مختلف بیماریوں کا باعث بنتے ہیں۔امریکا کی سدرن میتھوڈسٹ یونیورسٹی سے منسلک سائنسدانوں نے ایک تحقیق میں انکشاف

کیا ہے کہ شادی کے بعد خواتین جتنا مرضی کوشش کرلیں موٹی ہوتی جائیں گی جس کی وجہ محققین نے یہ بتائی ہے اگر خواتین کے شوہر مشروبات کے شوقین ہوں تو ان کی بیویاں بھی مشروبات کا زیادہ استعمال شروع کردیتی ہیں جبکہ مرد اپنی پرانی عادت کے باعث ہی مشروب پیتے ہیں۔ مشروبات کے زیادہ استعمال کی وجہ سے خواتین کا وزن بڑھ جاتا ہے اور وہ موٹی ہوجاتی ہیں۔اس کے علاوہ جن خواتین کے شوہروں کو روزانہ شیو کرنے کی عادت نہیں تو انہیں دیگر خواتین کے مقابلے میں انفیکشن کا زیادہ خطرہ ہوتا ہے۔ اگر میاں بیوی کے درمیان بہت زیادہ لڑائی ہو اور نوبت مار پیٹ تک پہنچ جائے تو اس صورت میں خواتین کو آنے والے زخم دیر سے بھرتے ہیں۔ اگر آپ اپنی شادی سے خوش ہیں تو اچھی خبر یہ ہے کہ اس کا فائدہ زندگی بھر ہوتا ہے۔ شدہ افراد جو اپنے رشتے سے بہت خوش ہوتے ہیں، ان میں درمیانی عمر میں موت کا خطرہ 20 فیصد تک کم ہوجاتا ہے، خصوصاً ایسے لوگوں کے مقابلے میں، جو اپنی شادی شدہ زندگی سے خوش نہ ہو۔ شادی کے متعدد طبی فوائد حاصل ہوتے ہیں یعنی صحت مند دل سے لے کر جسمانی وزن میں کمی تک۔اس تحقیق کے دوران 19 ہزار سے زائد شادی شدہ افراد کے ڈیٹا کا جائزہ لیا گیا، جن سے 1978 اور 2010 کے دوران شادی سے خوشی اور معیار کے بارے میں مختلف سوالات پوچھے گئے تھے۔جن لوگوں نے شادی کو انتہائی خوش باش قرار دیا ہے یا اس سے کافی حد تک خوش ہیں، تو ان میں کسی بھی وجہ سے جلد موت کا خطرہ 20 فیصد کم پایا گیا۔کولوراڈو یونیورسٹی کی تحقیق میں مزید بتایا گیا کہ شادی کے بعد اچھا تعلق متعدد طریقوں سے صحت میں بہتری کا باعث بنتا ہے، خصوصاً شریک حیات ایک دوسرے میں صحت مند عادات کو اپنانے کی حوصلہ افزائی کرتے ہیں۔اسی طرح خوش باش شادی کا تعلق نفسیاتی صحت کو بھی بہتر بناتا ہے جو کہ جسم کے لیے فائدہ پہنچاتا ہے۔محققین کا کہنا تھا کہ ذہنی صحت جسمانی صحت پر مثبت اثرات مرتب کرتی ہے اور شادی کے بعد شریک حیات سے مضبوط تعلق سے ذہنی صحت کے ساتھ جسمانی صحت بھی بہتر ہوتی ہے۔انہوں نے بتایا کہ شدہ افراد جو اپنے رشتے سے بہت خوش ہوتے ہیں اورشریک حیات سے ملنے والا سماجی تعاون بھی صحت کے لیے اہم ثابت ہوتا ہے اور زندگی میں تناﺅ مسئلہ نہیں بن پاتا۔

Leave a Reply

Top