You are here
Home > خبریں > پاکستان > قانون پر عملدرآمد یقینی بنانے کا معاملہ۔۔۔ چیف جسٹس آف پاکستان 31 جولائی کو کیا کرنے جارہے ہیں؟ تازہ ترین خبر

قانون پر عملدرآمد یقینی بنانے کا معاملہ۔۔۔ چیف جسٹس آف پاکستان 31 جولائی کو کیا کرنے جارہے ہیں؟ تازہ ترین خبر

اسلام آباد(ویب ڈیسک)چیف جسٹس پاکستان جسٹس آصف سعید خان کھوسہ ماسکو میں ہونیوالی قانون کی علمدار ی کو یقینی بنانے سے متعلق دسویں عالمی کانفرنس میں شرکت کرینگے، اس سلسلے میں وہ 31 جولائی کو روس روانہ ہونگے، کانفرنس 31 جولائی سے 3 اگست تک جاری رہے گی ، چیف جسٹس کو روس کے فیڈرل

بیلف سروس کے سربراہ نے کانفرنس میں شرکت کی دعوت پردی ہے ۔ یاد رہے کہ اگرچہ پاکستان کے پاس ایک جامع آئین اور ایک قانونی ضابطہ کار موجود ہے تاہم اس کے باوجود بھی اس ریاست کا عملی ڈھانچہ ابھی تک بھی روایتی داخلی سلامتی اور قانون کے نفاذ تک محدود ہے ۔ یہاں کے پالیسی سازوں اور پیشہ ور ماہرین کے قانون کی حکمرانی سے متعلق عمومی تصورات محض جرائم کی روک تھام اور خاتمے اور روایتی و غیر روایتی خطرات سے نمٹنے تک محدود ہیں ۔ تاہم اگر اصولی طور پر دیکھا جائے تو یہ اس میں چند بنیادی خامیاں ہیں کیونکہ اس میں آئین کے اصول میں مساوی احتساب اور شفافیت کا عمل مساوی اور منصفانہ آئینی نفاذ ، بشمول بنیادی انسانی حقوق کا تحفظ اور غیر جانبدار طریقے پرتنازعات کی مصالحت کا عمل موجود نہیں ہے ۔ آئین کی وضاحت کے عمل میں لائحہ عمل کی کمی اور تفریق نے دفاعی اداروں کے درمیان عدم توازن پیدا کیا ہے اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی فعالیت کو متاثر کیا ہے ۔ ایک کامیاب اور فعال ریاست میں قانون کی حکمرانی ایک جمہوری تصور ہے ۔ کمزور اور تبدیلی کے عمل سے گزرتی ہوئی ریاستوں کو ایک مقابلہ اور بھی درپیش رہتا ہے جسے ریاست کی عملداری کہتے ہیں ۔ یہ خاص طور پر اس حکومت کا معاملہ ہے جو جمہوری اصولوں پر کھڑی ہو نہ کہ افراد کی منشا پہ ، اگرچہ اس اصطلاح کو اس صورت کے متضاد حالات میں بھی استعمال کیا جاتا ہے ۔

Leave a Reply

Top
Игровые автоматы